")
پیغمبر (ص) کی رحلت کے بعد کے واقعات و حوادث اور
بیانات تاریخی

پیغمبر (ص) کی رحلت کے بعد جس طرح حضرت (ص) نے خبر دی تھی  ، اسلامی سماج پستی میں گِر پڑا   ۔  شرائط اس طرح کے ہوگئے تھے کہ  اميرالمؤمنين (ع) خانہ نشین ہوگئے ، اور جبکہ آپ اپنے گھر کے اندر تھے ان پر حملہ کردیاگیا ۔

پیغمبر صلى‏ الله‏ عليه‏ و‏آله کی بیٹی نے  ان کا دفاع کیا، اور اس دفاع  کرنے میں زخمی ہوگئیں ۔ جو زخم حضرت  زهراء مرضيه عليها السلام نے کھائے ہیں، طول تاریخ میں ہمیشہ ان کو سن کر خاندان پيامبر صلى‏ الله‏ عليه‏ و‏آله  کے چاہنے والوں کا  دل کو جلنےلگتا ہے، جبکہ   پیغمبر صلى‏ الله‏ عليه‏ و‏آله نے ان کے بارے میں فرمایا تھا:

فاطمہ(س) میرے جسم اور میرے جگر کا ٹکڑا ہے،  زهرا عليها السلام  مجھ سے ہے اور میں اس سے ہوں ۔

جو اسے اذیت دے گا اس نے مجھے اذیت دی ہے ۔ جو اسے ناراض کرے گا اس نے مجھے ناراض کیاہے اور جو فاطمہ (س)  کو غضبناک کرے اس نے مجھے غضبناک کیا ہے

 

بحار  الانوار، ج 30، ص353