")
متفرقه
سوال: کیا (بیک گیمان)نرد کا بورڈ جوتفریح کے اسباب میں شمار کیا جاتا ہے اور اسی طرح فکری شطرنج بازی حرام ہے یا حلال البتہ جبکہ اس میں شرط نہ باندھی جائے؟ کیا مقابلوں کا انعقاد مجاز حکام کے زیر نظرپروفیشنل لیگ اور پیشہ ورانہ طریقہ سے ورزشی جگہوں پر، اسی طرح شطرنج کی بساط ومکانات، یہ چیزیں جناب عالی کی نظر میں جائز ہیں یا نہیں؟
جواب: جن آلات و وسائل کو جوئے کے لئے بنایا گیا ہے ان کے ذریعہ کھیل و مقابلہ کرنا جیسے شطرنج و تاش اور نرد(بیک گیمان)وغیرہ،ہار جیت اور شرط بندی کے قصد سے حرام ہے، بلکہ اگر تفریح اور بغیر شرط بندی کے قصد سے ہو تب بھی احتیاط واجب کی بناپر جائز نہیں ہے، لیکن وہ آلات و وسائل جو عرف کی نظر میں جوئے سےمخصوص نہیں ہیں یا اس وقت جوئے کے آلات سے خارج ہوگئے ہیں،ان میں شمار نہیں ہوتے ہیں، ان سے بغیر شرط بندی کے کھیلنا اور مقابلہ کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔